Warning: Undefined array key "geoplugin_countryName" in /customers/d/7/4/urdufalak.net/httpd.www/wp-content/plugins/stylo-core/stylo-core.php on line 96

جز ترے کیسے کٹی عمر ہماری ،

محترم قارئین ایک غزل آپ کے ذوقِ مطالعہ کی نذر ! ڈاکٹر احمد ندیم رفیع

 

غزل                    ڈاکٹر احمد ندیم رفیع

جز  ترے  کیسے  کٹی  عمر ہماری ،

مت پوچھ  جس  طرح  دل  پہ چلی کوئی کٹاری،   مت پوچھ

وصلِ  یک  لمحہ ،

شبِ  ہجرِ  مسلسل ،   توبہ !   اولیں   عشق   کی   اوقات   گزاری ،   مت پوچھ

بزمِ    اغیار     میں    بے  ساختہ ,  گاہے  گاہے آنکھ   سے  آنکھ  ملانے کی  خماری،  مت پوچھ

معنئِ   حسنِ   خفی  جب   سے کھلا  ہے مجھ  پرفہم و ادراک پہ  کیا  وجد  ہے طاری ،

مت پوچھ     غمِ  دوراں  کی  کڑی  دھوپ  میں جل کر دن بھرکس  طرح  زلفِ  شبِ  ہجر سنواری ،  مت پوچھ
یوں  تو  انجامِ   محبت   پہ  بھی  تر  ہیں  آنکھیں کب سے

یہ چشم بے فیض ہیجاری،  مت پوچھ

ہم  نے کیوں  تیرے  لئے  جان گنوا  دی ہنس کر؟ (ہم کو بھی تیری طرح جان تھی پیاری) مت پوچھ

قبل   از   وقت    گلِ   تازہ     بکھر   جانے   پر  کتنی   رنجیدہ    ہوئی   بادِ   بہاری ،   مت پوچھ

صبحِ   نو  روز   بھی  آئے  گی ،  یہ   مانا  لیکن  کس قدر ہم  پہ  یہ اک رات ہے بھاری، مت پوچھ

ڈاکٹر احمد ندیم رفیع —  —

 

اپنا تبصرہ بھیجیں