“ہم بڑے ہو گۓ”

انتخاب فوزیہ وحید مسکراہٹ تبسم ہنسی قہقہے سب کے سب کھو گئے ہم بڑے ہو گۓ ذمہ داری مسلسل نبھاتے رہے بوجھ اوروں کا بھی ہم اٹھاتے رھے اپنا دکھ سوچ کر روئیں تنہائی میں۔ محفلوں میں مگر مسکراتے رھے مزید پڑھیں

برف باری

اے اہلِ گلزار خیال سلام مسنون   ایک نظم برفباری آپ کی خدمت میں پیش ہے۔ آج کل شمالی امریکہ کے مشرقی علاقے برفباری کی لپیٹ میں ہیں۔ میں میری لینڈ کا رہنے والا ہوں۔ نظم میں وہیں کے تجربے  مزید پڑھیں

اے دل بیتاب

شازیہ عندلیب اے دل بیتاب مجھ کو تو بتا مخفی ہے آخر راز کیا کیوں قدم جمتا نہیں کیوں قلم اٹھتا نہیں کھڑکیاں ہی کھڑکیاں ہیں ہر طرف کیوں دردل کوئی کھلتا نہیں پردہ کوئی اٹھتا نہیں اے محمل نشیں مزید پڑھیں