Breaking News
Home / ادب / شعرو ادب / شاعری / آتے رہنے کے لئے شکریہ اے یاد کے دوست

آتے رہنے کے لئے شکریہ اے یاد کے دوست

از ڈاکٹر جاوید جمیل
 
 
کیا نگاہوں نے کوئی خواب سجایا نہ کبھی
کیا کسی کو بھی قریب اپنے بلایا نہ کبھی
 
آتے رہنے کے لئے شکریہ اے یاد کے دوست
میں ہی مجرم ہوں تری یاد میں آیا نہ کبھی
 
اسکی البم میں تو تصویر مری ہے موجود
اس نے تصویر کو سینے سے لگایا نہ کبھی
 
میں تجھے کیسے بتا دیتا دل_ناز کا حال
حال_دل میں نے تو خود کو بھی بتایا نہ کبھی
 
دل چرا کر مرا کہتا ہے مجھے چور یہ اب
خود ہی چوری ہوا، اس نے تو چرایا نہ کبھی
 
قہقہے آوروں کی خوشیوں میں رہے ہیں شامل
 میرے حالات نے خود مجھکو ہنسایا نہ کبھی
 
میں نے اوروں سے سنا ہے کہ نسیم آتی ہے
کیوں مجھے وقت_سحر اس نے جگایا نہ کبھی
 
تیری جاوید یہ عادت ہے خدا کو بھی پسند
تو نے نظروں سے کسی کو بھی گرایا نہ کبھی
 

Check Also

بہت مصروف رہتے تھے

بہت مصروف رہتے تھے ہواؤں پر حکومت تھی تکبر تھا کہ طاقت تھی بلا کی ...

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *



Enable Google Transliteration.(To type in English, press Ctrl+g)

Copy Protected by Chetan's WP-Copyprotect.
%d bloggers like this: