ادھوری نظم

شعاع نور وجود خاک میں ہاری ہوئی ساعت کی جب تحلیل ہوتی ہے کسی طاقت کی تب تکمیل ہوتی ہے یہی کہتی تھی نا مجھ سے بڑی دلگیر ساعت ہے یہ جب تحلیل ہوتی ہے بڑی تکلیف ہوتی ہے کہ مزید پڑھیں

خرد اورخدا

شاعرہ: شعاع نور انتخاب: ڈاکٹر شہلا گوندل گماں کی آخری سیڑھی پہ کم علمی کی ساعت میں خرد گردن جھکائے کب سے خالی ہاتھ بیٹھی ہے ادھوری تو نہیں لیکن وہ کس کے ساتھ بیٹھی ہے تمناؤں کے گھیرے میں مزید پڑھیں

یعنی تو!

ڈاکٹرفیصل حنیف “مانند خار خشک طوفاں رسیدہ، اپنا حال درہم کیےگریباں دریدہ، میں بوڑھا مقہورستم دیدہ ، اسد اللہ خاں مردم گزیدہ، زمانے کی روش سے آزردہ ، احباب کی دوستی سے افسردہ، جدید شاعری سے خوفزدہ، غالبؔ ختم شدہ، مزید پڑھیں

مصرع طرح: اے شہِ ملکِ جنوں غم کے بیابان میں آ (شاعر: ولی دکنی)

افتخار راغبؔ دوحہ، قطرغزل برائے آن لائن عالمی طرحی مشاعرہ بیادِ ولی دکنی زیر اہتمام: بزمِ اردو قطر (قطر کی قدیم ترین اردو ادبی تنظیم قائم شدہ 1959) مصرع طرح: اے شہِ ملکِ جنوں غم کے بیابان میں آ (شاعر: مزید پڑھیں

مکتوب مرزا اسداللہ خان غالب بنام عمران خان

تحریر: ڈاکٹر فیصل حنیف – دوحہ، قطرجز خان اور کوئی نہ آیا بروئے کار (مکتوب مرزا اسداللہ خان غالب بنام عمران خان) ڈاکٹر فیصل حنیف برخوردار کامگارسعادت و اقبال نشان ، میری جان عمران ہمہ دان، مبارک مبارک، سلامت سلامت، مزید پڑھیں