سجاوٹ

منی افسانہ ۔ سید مکرم نیاز ۔

“لڑکی تعلیمی یافتہ ہے ؟”
“جی ہاں ایم اے ، بی ایڈ ہے ۔”

“قد غالبا پانچ فیٹ سے اوپر ہی ہوگا ؟”
“جی ہاں پانچ فیٹ دو انچ ۔۔۔۔”
“رنگ ۔۔؟”
“فیئر کلر ۔۔۔”
“دین دار تو ضرور ہوگی ۔۔؟”
“جی ہاں یقینا ہے ۔۔”
“تب تو پھر مناسب رشتہ لگتا ہے ۔”
“تو آپ راضی ۔۔؟”
“نہیں ٹھہرئیے ۔۔ آپ نے فرقے کا نام نہیں بتایا کہیں لڑکی سید زادی تو نہیں ؟”
“جی ہاں لڑکی نجیب الطرفین سید ہے ۔”
“اوہ ۔۔۔”
“کیوں، آپ خاموش کیوں ہو گئے ؟”
“جی ۔۔ جی وہ بات دراصل یہ ہے کہ ۔۔ ہم لوگ سیدوں کا بڑا احترام کرتے ہیں ۔۔۔ لڑکی سے کسی قسم کا کام لینے سے ہمیں ہچکچاہٹ ہوتی رہے گی ۔۔۔”
“کیا ۔۔؟”
“جی ہاں ، ہم معذرت چاہتے ہیں ۔۔”
“مناسب خیال ہے آپ کا! میں جانتا ہوں آپ قرآن شریف کا بھی بے حد احترام کیا کرتے ہیں ۔۔۔ اسے محض طاق میں سجا کر ۔۔۔”
“جی ۔۔ جی ، کیا فرمایا آپ نے ؟”
“جی ہاں ، خدا حافظ !!”

اپنا تبصرہ بھیجیں