Home / ادب / شعرو ادب / شاعری (page 20)

شاعری

poetry

میں گنجہ تھا مگر اتنا نہیں تھا

میں گنجہ تھا مگر اتنا نہیں تھا علیم خان فلکی ۔ جدہ تیرے بارے میں جب سوچا نہیں تھا میں گنجہ تھا مگر اتنا نہیں تھا آج لڑکی نے اک لڑکے کو پیٹاکہا اس سیکہ کیوں چھیڑا نہِں تھا مرے دامن کے دھبے گِن رہا تھااسکے کمرے میں آئینہ نہیں تھا نہ جہیز اور جوڑا کچھہ لیا وہوہ کڑکا تھا مگر ...

Read More »

پرندہ لوٹ آنا چاہتا ہے

پرندہ لوٹ آنا چاہتا ہے زمیں سے ایک رشتہ تو نہیں تھا مگر دل آب و دانہ  چاہتا ہے سلاسل رزق کے پیروں سے باندھے زمانہ آزمانا  چاہتا ہے بہت روتی ہے پرکھوں کی حویلی وہیں دل لوٹ جا نا چاہتا ھے تھکن پیروں سے اٹھ کردل سے لپٹی سفر کوئی ٹھکانہ چاھتا ھے یہ  دل پچھلا خسارہ بھول بیٹھاٴ ...

Read More »

شاطر کھلاڑی

شاطر کھلاڑی شاعر محمد ادریس لاہوری بڑا شاطر کھلاڑی ہوں محبت میں اناڑی ہوں لٹائی کس طرح تم پر کماتا جو دیہاڑی ہوں مجھے تو اس طرح مت ہانک کہ جیسے بیل گاڑی ہوں  

Read More »

لرزتے دل کے لئے باعث_ ثبات ہے تو

غزلاز ڈاکٹر جاوید جمیل   لرزتے دل کے لئے باعث_ ثبات  ہے تو بکھرتی فکر ہے اور وجہ_ التفات ہے تو وہ میری آنکھوں پہ رکھ کر کے ہاتھ پیچھے سے یہ بولے "کون”، میں بولا "مری حیات ہے تو” مجھے غرض کوئی کیا چاند اور ستاروں سے مرے وجود کی نظروں میں کائنات ہے تو ملیگی خلد، کرونگا اگر ...

Read More »

آوارہ دل

آوارہ  دل   مجاز لکھنوی شہر کی رات اور میں نا شاد و نا کارہ پھروںجگمگاتی، جاگتی سڑکوں پہ آوارہ پھروںغیر کی بستی ہے کب تک دربدر مارا پھروں                              اے غم دل کیا کروں، اے وحشت دل کیا کروں جھلملاتے قمقموں کی راہ میں زنجیر سیرات ...

Read More »

خواب سفر کی شاعرہ

خواب سفر کی شاعرہ شاہینہ فلک صدیقیجاوید اختر بھٹی شاہینہ فلک صدیقی اردو اور پنجابی کی شاعرہ ہیں۔ انہوں نے اپنی شاعری کا آغاز بیس برس پہلے کیا لیکن انہوں نے اردو شاعری پر زیادہ توجہ دی۔ 1987 میں انہوں نے اپنا کلام احمد ندیم قاسمی کو اصلاح کے لیے بھیجا۔ آگے شاہینہ فلک کی زبانی سینے۔جواب ملا آپ کے ...

Read More »

ہائے کربلا والو ہائے کربلا والو

اے خدا کے بندوں میں منتخب خدا والوتختِ اِنما والو    تاجِ  ہل اتی  والوشانِ مصطفے   والو  وضعِ مرتضی والوکیا وفا پہ جانیں  دیں تم نے اے وفا والو          ہائے کربلا والو ہائے کربلا والو  ہائے کربلا والو ہائے کربلا والو چھوٹے چھوٹے بچوں نے جنگ کی اجازت لیبڑھ گئے جواں بن کر کم سِنی ...

Read More »

ر زمینتم قتل کرو ہو کہ کرامات کرو ہو

در زمینتم قتل کرو ہو کہ کرامات کرو ہو رپبلکن  کے  نام رومنی  کی   اور  راین  کی  سدا  بات  کرو  ہو                                                          تم   بات   کرو  ہو  کہ  خرافات  کرو  ہو  ...

Read More »

دو تازہ شعر مہتاب قدر۔جدہ

دو تازہ شعر مہتاب قدر۔جدہ بام و در اور پیڑ پودے  جھک چکے ہیں ، ہے کہ نیں ! عمر کے ساتھ اچھے اچھے جھک چکے ہیں ،ہے کہ نیں ! اسقدر  پستی میں کیسے آ گیا  ہوں  آج میں ؟ میرے آگے تو فرشتے جھک چکے ہیں ہے کہ نیں! مہتاب قدر

Read More »
Copy Protected by Chetan's WP-Copyprotect.