Home / ادب / شعرو ادب

شعرو ادب

کیا کریں زورِ بیاں قلمیں دواتیں کیا کریں

جی نہیں لگتا کتابوں میں کتابیں کیا کریں کیا پڑھیں پڑھ کر بجھی بے نور سطریں کیا کریں کچھ عجب حالت ہے اے دل کچھ سمجھ آتا نہیں سو رہیں گھرجاکے یا گلیوں میں گھومیں کیا کریں واسطہ پتھر سے پڑ جائےجہاں سوچوں وہاں کیا کریں زورِ بیاں قلمیں دواتیں کیا کریں ایسی یخ بستہ ہوا میں کونپلیں پھوٹیں گی ...

Read More »

حقیقت کم اداکاری بہت ہے

غزل (سید اقبال رضوی شارب ) حقیقت کم اداکاری بہت ہے یہاں ہر لمحہ مکّاری بہت ہے سنہرے خواب اسنے سب کو بیچے وہ لیڈر کم ویا پاری بہت ہے فصل نفرت کی پھر کاٹے گا شاید فضاؤں میں ستمکاری بہت ہے کوئی گوشہ نہیں خوش حال سچ ہے کہ شرق و غرب سسکاری بہت ہے ہوا مخدوش جھوٹوں کا ...

Read More »

فسانہ اور ہوتا ہے حقیقت اور ہوتی ہے

زباں تک جو نہ آئے وہ محبت اور ہوتی ہے فسانہ اور ہوتا ہے حقیقت اور ہوتی ہے نہیں ملتے تو ایک ادنیٰ شکایت ہے نہ ملنے کی مگر مل کر نہ ملنے کی شکایت اور ہوتی ہے یہ مانا شیشۂ دل رونقِ بازارِ الفت ہے مگر جب ٹوٹ جاتا ہے تو قیمت اور ہوتی ہے نگاہیں تاڑ لیتی ہےمحبت ...

Read More »

جوگی።።።።።

سڑک کنارے بیٹھا تھا کوئی جوگی تھا یا روگی تھا کیا جوگ سجائے بیٹھا تھا ؟ کیا روگ لگائے بیٹھا تھا ؟ تھی چہرے پر زردی چھائی اور نیناں اشک بہاتے تھے تھے گیسو بکھرے بکھرے سے جو دوشِ ھوا لہراتے تھے تھا اپنے آپ سے کچھ کہتا اور خود سن کے ھنس دیتا تھا کوئی غم کا مارا لگتا ...

Read More »

"ہم بڑے ہو گۓ”

انتخاب فوزیہ وحید مسکراہٹ تبسم ہنسی قہقہے سب کے سب کھو گئے ہم بڑے ہو گۓ ذمہ داری مسلسل نبھاتے رہے بوجھ اوروں کا بھی ہم اٹھاتے رھے اپنا دکھ سوچ کر روئیں تنہائی میں۔ محفلوں میں مگر مسکراتے رھے کتنے لوگوں سے اب مختلف ہو گۓ ہم بڑے ہو گۓ اور کتنی مسافت ھے باقی ابھی زندگی کی حرارت ...

Read More »

اردو کے وہ ایک سو مشہور ترین اشعار

اردو کے وہ ایک سو مشہور ترین اشعار لب پہ آتی ہے دُعا بن کے تمنا میری زندگی شمع کی صورت ہو خدایا میری علامہ اقبال بنا کر فقیروں کا ہم بھیس غالب تماشائے اہلِ کرم دیکھتے ہیں مرزا غالب قتل حسین اصل میں مرگِ یزید ہے اسلام زندہ ہوتا ہے ہر کربلا کے بعد مولانا محمد علی جوہر نازکی ...

Read More »

آج کے حالات کے تناظر میں ایک سدا بہار کلام :

شاعر عوام حبیب جالب (مرحوم) کا آج کے حالات کے تناظر میں ایک سدا بہار کلام : ناموس کے جھوٹے رکھوالو بے جرم ستم کرنے والو کیا سیرت نبوی جانتے ہو؟ کیا دین کو سمجھا ہے تم نے؟ کیا یاد بھی ہے پیغام نبی؟ کیا نبی کی بات بھی مانتے ہو؟ یوں جانیں لو، یوں ظلم کرو کیا یہ قرآن ...

Read More »

عشق میں نے لکھ ڈالا "قومیت” کے خانے میں

عشق میں نے لکھ ڈالا "قومیت” کے خانے میں اور تیرا دل لکھا "شہریت” کے خانے میں مجھ کو تجربوں نے ہی باپ بن کر پالا ہے سوچتا ہوں کیا لکھوں "ولدیت” کے خانے میں میرا ساتھ دیتی ہے میرے ساتھ رہتی ہے میں نے لکھا تنہائی "زوجیت” کے خانے میں دوستوں سے جاکر جب مشورہ کیا تو پھر میں ...

Read More »
Copy Protected by Chetan's WP-Copyprotect.