اوررسیز پاکستانی کو ووٹ کا حق

وزیراعظم عمران خان نے اپنا ایک اور وعدہ پورا کردیا ای بی ایم ووٹنگ مشین اور اورسیرزپاکستانیوں کو ووٹ کا حق دینے کا قانوں پاس کیا جس سے 90 لاکھ سے زیادہ پاکستانی اپنا حق رائے استعمال کرسکے گئے ۔اس سے نہ صرف دوسرے ممالک میں بیٹھے پاکستانیوں کو قانون سی میں حصہ لینے کا مواقع ملے گا بلکہ وہ ملکی ترقی میں پہلے سے زیادہ اہم کردار ادا کرسکے گئے ۔اورسیرز پاکستانی ملکی معیشت میں اہم کردار ادا کررہے ہیں اور اس کے ساتھ ساتھ کسی بھی نگہانی صورت حال میں ہمیشہ بڑھ چڑھ کر اپنے ہم وطنوں کی مدد کرتے ہیں ۔بیرون ممالک۔میں موجود پاکستانی سالانہ 30 ارب ڈالر سے زائد رقم۔پاکستان بھجواتے ہیں۔ان کی اپنے وطن سے محبت بھی کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہے۔وطن سے دور بھی ہمیشہ پاکستان کے حالات کے بارے میں پریشان رہتے ہیں اور خوش حال اور ترقی یافتہ پاکستان کے لیے بلکہ اس طرح پریشان ہیں جیسے دوسرے ہم وطن ۔کہی دہائیوں سے ملک سے دور ہیں مگر ان کا سب کچھ آج بھی اپنا دیس اپنی مٹی ہے جس سے وہ بے پناہ محبت کرتے ہیں۔مگر اس سب کے باوجود آج تک ان کو قانوں سازی میں حصہ ڈالنے اور ان کے تجربات سے فائدہ اٹھانے کا مواقع نہیں دیا گیا تھا ۔کیونکہ وہ مختلف ترقی یافتہ ممالک میں اہم کردار ادا کررہے ہیں ۔ان معاشرہ میں آپکو بہت کامیاب کاروباری اور بڑی بڑی عہدوں پر پاکستانی نظر آئے گئے جن کے تجربات سے فائدہ اٹھاتے ہیں اپنے ملک میں بہتری لائی جاسکتی ہے۔ اس قانوں کے پاس ہونے کے بعد بیرون مملک میں بسنے والے پاکستانی بھی جمہوری عمل کا حصہ بن سکے گئے ۔قانوں کے مطابق الیکشن کمیشن نادرا یا کسی بھی دوسرے ادراے کے ساتھ مل کر ایسے اقدامات کرئے گا جس سے اورسیرز پاکستانی عام انتخابات میں اپنا حق رائے دئی استعمال کرسکے ۔اپوزیشن کا کام اگرچہ حکومتی پالیسوں پر تنقید کرنا ہے مگر کچھ مفاد آماہ کے قوموں میں یہ صرف تنقید سیاسی پوائنٹ سکورنگ کے علاوہ کچھ نہیں اورسیرز پاکستانیوں کو ووٹ کے حق کے قانوں پر اپوزیشن کی شدید مخالفت سے ایسا لگ رہا تھا کہ شاید بیرون ممالک میں رہنے والے پاکستانیوں سے ان کا کوئی تعلق نہیں جب ان کے ادوار میں بھی اربوں ڈالر پاکستان آتے رہے ہیں مگر ان کو ووٹ کا حق دینے کی مخالفت کی منتق سمجھ سے بالاتر ہے۔مگر عمران خان کے بارے میں جیسا کہا جاتا ہے کہ جب وہ فیصلہ کرلیے تو وہ اپنے مقصد کے حصول کے لیے آخر تک کوشش کرتے ہیں جو انہوں نے کہ اور پارلیمنٹ میں برتری اگرچہ زیادہ نہیں حکومت اور اپوزیشن کا فرق بہت معمولی سا ہے پھر بھی انہوں نے یہ قانوں پا س کروالیا اور اپنا وعدہ پورا کیا۔کیونکہ اکثر لیڈر الیکشن میں جو وعدے کرتے ہیں اقتدار میں آنے کے بعد وہ بھول جاتے ہیں مگر اس وعدہ کی تکمیل نے یہ بات بھی ثابت کی کے تحریک انصاف کی حکومت اپنے منشور کو عملی جامہ پہنانے کے لیے آج بھی بھرپور اقدامات کررہی ہے.اس سے پہلے جو بھی حکومتیں تھی انہوں نے اورسیرز پاکستانیوں سے صرف وعدہ ہی کیے مگر وفا نہ کر سکے ۔ضروت پڑنے پر بیرون ملک آباد پاکستانیوں کو استعمال تو کیا بات مگر ان کے لیے صرف باتیں کی گئ۔ووٹ کا حق ملنے سے دیار غیر میں آباد پاکستانی اپنے مسئلہ کے حل کے لیے بھی مضبوط آواز بلند کرسکے گئے۔پوری دنیا میں موجود پاکستانیوں کی طرح ناروے میں موجود پاکستانی اس قانوں سازی سے خوش ہیں کہ اب وہ عملی طور پر پاکستان کے انتخابات اور جمہوری عمل کا حصہ بن سکے گئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

Enable Google Transliteration.(To type in English, press Ctrl+g)