Home / حالات حاضرہ / خبریں / مساجد اور مدارس کے وضو کا پانی کسے دیا جائے؟ لاہور ہائیکورٹ نے اہم حکم دیدیا

مساجد اور مدارس کے وضو کا پانی کسے دیا جائے؟ لاہور ہائیکورٹ نے اہم حکم دیدیا

مساجد اور مدارس کے وضو کا پانی کسے دیا جائے؟ لاہور ہائیکورٹ نے اہم حکم دیدیا

ہائیکورٹ نے پنجاب بھر میں مساجد اور مدارس کے وضو کا پانی پودوں کا دینے کا حکم دیتے ہوئے کہا ہے کہ داتا دربار اور پاکپتن شریف کے درباروں کے وضو کے پانی کو محفوظ کرنے کیلئے ٹینک لگائے جائیں۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ میں پانی کو محفوظ کرنے سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی جس دوران چیف سیکرٹری پنجاب نسیم کھوکھر، چیئرمین پی اینڈ ڈی، سیکرٹری اوقاف، ایم ڈی واسا اور ڈائریکٹر پی ایچ اے عدالت میں پیش ہوئے۔ عدالت نے پنجاب بھر کی مساجد اور مزارات کے وضو کا پانی کو پودوں کو دینے کا حکم دیا۔

جسٹس علی اکبر قریشی نے کہا کہ داتا دربار اور پاکپتن شریف کے درباروں کے وضو کے پانی کو محفوظ کرنے کیلئے ٹینک لگائے جائیں۔ سیکرٹری اوقاف نے عدالت کو بتایا کہ مزارات پر ٹینک لگانے کیلئے فنڈز موجود نہیں جس پر چیف سیکرٹری نے دوران سماعت سیکرٹری اوقاف کو ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ فنڈز کا انتظام ہم کردیں گے، آپ فوری ٹینک لگانے کیلئے اقدامات کریں۔

چیف سیکرٹری پنجاب نسیم کھوکھر کا کہنا تھا کہ عدالت کی جانب سے پانی کے مسئلہ پر سماعت کی تعریف کرتا ہوں، پانی زندگی اور موت کا مسئلہ بن چکا ہے اور اس وقت پانی کی ایک ایک بوند قیمتی ہے۔انہوں نے کہا کہ پانی کو محفوظ کرنے سے متعلق عملدرآمد کے معاملے پر فقدان ہے، تاہم عدالتی حکم پر من و عن عمل کیا جائے گا۔

ایم ڈی واسا نے عدالت میں جواب جمع کرواتے ہوئے بتایا کہ عدالتی حکم پر سروس سٹیشنز مالکان سے 95 لاکھ روپے پانی کے چارجز کی مد میں وصول کر لئے۔ انہوں نے بتایا کہ پانی کے سرکاری سطح پر مجموعی طور پر 7 لاکھ صارف ہیں جن میں سے صرف 40 ہزار پانی کے میٹرز لگے ہیں۔پانی کے میٹرز سے متعلق فنڈز کا فقدان ہے جس پر عدالت نے چیئرمین پی اینڈ ڈی کو پانی کے میٹرز فراہم کرنے کیلئے اقدامات کرنے کا حکم دیا۔

جسٹس علی اکبر قریشی نے کہا کہ پانی بھی ضائع ہورہا ہے اور بل بھی نہیں دے رہے، سروس سٹیشنز مالکان کو خودکار نظام پر منتقل کرنے کیلئے 2 ماہ کا وقت دیا تھا لیکن انہوں نے کچھ نہیں کیا۔ عدالت نے خودکار نظام پر منتقل نہ کرنے والے پنجاب بھر کے سروس سٹیشنز 10 روز میں بند کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ پنجاب بھر کے ڈی سی اوز سروس سٹیشنز سے پانی کا بل وصول کریں۔

جسٹس علی اکبر قریشی نے پنجاب بھر میں تمام نجی ہاؤسنگ سوسائٹیز سے پانی کے بل وصول کرنے کا حکم بھی دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ نجی ہاؤسنگ سوسائٹیز علاقہ مکینوں سے تو پانی کے چارجز لے رہی ہیں، لیکن ریاست کو کوئی پیسہ نہیں دیتیں۔جسٹس علی اکبر قریشی نے کہا کہ عدالتی احکامات پر عمل نہ کرنے والوں کو جیل بھجوادیں گے۔

 

Check Also

ورلڈکپ سے ملنے والے 30 لاکھ ڈالرز کیوی کھلاڑیوں میں کیسے تقسیم کئے جائیں گے؟ ایسی خبر آ گئی کہ ایک بھی میچ نہ کھیلنے والے ٹام بلنڈل بھی خوشی سے ناچ اٹھیں

نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ نے ورلڈکپ سکواڈ میں شامل اپنے کھلاڑیوں کو ایک ہی پیمانے ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Enable Google Transliteration.(To type in English, press Ctrl+g)

Copy Protected by Chetan's WP-Copyprotect.
%d bloggers like this: