Home / حالات حاضرہ / خبریں / آربائیدر پارٹی کے یوتھ ونگ کے لیڈر کی ہوم ورک ختم کرنے کی تجویز

آربائیدر پارٹی کے یوتھ ونگ کے لیڈر کی ہوم ورک ختم کرنے کی تجویز

آربائیدر پارٹی کے یوتھ ونگ کے لیڈر حسینی مانی نے اسکولوں سے ہوم ورک ختم کرنے کی تجویز پیش کی ہے۔تجویز کے بارے میں مختلف رائے پائی جاتی ہیں۔حسینی مانی کا کہنا ہے کہ ہوم ورک کی وجہ سے بچوں میں تفرکہ پیدا ہوتا ہے دوسرے بچوں اور والدین کی روزمرہ مصروفیات میں ہوم ورک کرنا ایک اضافی بوجھ ثابت ہوتا ہے۔اس لیے اسے ختم کر دینا چاہیے۔
کنزرویٹو پارٹی میں شعبہء تعلیم کے لیڈر اسٹیفن Steffen Handal, نے اخبار داگ بلادے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ نہ تو ہوم ورک کے خلاف ہیں اور نہ اس کے حق میں ہے تاہم حسینی کی اس تجویز کو آزمانے میں کوئی حرج نہیں۔جبکہ کنزرویٹو پارٹی کی یوتھ ونگ کی لیڈر نے اس بات پر اعتراض کرت ہوئے کہا کہ حسینی اصلموضوع سے ہٹ رہے ہیں۔
بروفلٹ نے ایک اخباری بیان میں کہا کہ یہ درست ہے کہ اسکول اس وقت سماجی تفر قات کو کام کرنے میں ناکام ہیں لیکن کوئی بھی ہوم ورک کرنے سے اسکول میں برا طالبعلم نہیں بنتا۔یہ انفرادی سطح پر سیکھنے کی بہترین مشق ہے اس لیے ہوم ورک ختم کرنے کی تجویز کوئی اچھی تجویز نہیں ہے۔
NTB/UFN

Check Also

ورلڈکپ سے ملنے والے 30 لاکھ ڈالرز کیوی کھلاڑیوں میں کیسے تقسیم کئے جائیں گے؟ ایسی خبر آ گئی کہ ایک بھی میچ نہ کھیلنے والے ٹام بلنڈل بھی خوشی سے ناچ اٹھیں

نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ نے ورلڈکپ سکواڈ میں شامل اپنے کھلاڑیوں کو ایک ہی پیمانے ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Enable Google Transliteration.(To type in English, press Ctrl+g)

Copy Protected by Chetan's WP-Copyprotect.
%d bloggers like this: