Breaking News
Home / ادب / شعرو ادب / شاعری / برف باری

برف باری

اے اہلِ گلزار خیال
سلام مسنون
 
ایک نظم برفباری آپ کی خدمت میں پیش ہے۔ آج کل شمالی امریکہ کے مشرقی علاقے برفباری کی لپیٹ میں ہیں۔ میں میری لینڈ کا رہنے والا ہوں۔ نظم میں وہیں کے تجربے  اور مشاہدے لایا  ہوں۔ مثلا صفا کرنے والے نے پھیرا لگایا سے مراد وہ ٹرک ہے جس کے آگے ایک کڑچھا لگا  ہوتا ہے اور وہ سڑک صاف کرکے ادھر ادھر تودے لگا جا تا ہے۔ دوسرے درختوں پر برف پگھل کر شاخوں پر ایک شیشہ کا غلاف سا بن جاتی ہے تو بہت خوبصورت لگتا ہے۔ 
احقر، یمین الاسلام زبیری
 
 

برف باری

یمین الاسلام زبیریEmoji


ہر اک شے پہ شبنم     جمانے    لگی     ہے   Emojiکہ زور اب تو سردی دکھانھے لگی ہے

کہ کپڑے گرم  سب  پہننے  لگے  ہیں      Emojiلحاف اب تو  راتوں کو لینے لگے ہیں

کسی دن بھی دیکھو کہ پنبہ گرے گا      Emojiسفیدی  ہر  اک  چیز  پر  یہ کرے  گا

ہوا میں کہ گالے    جو        ہر   سو  اڑیں   گے      Emojiسبھی  لوگ خوش ہو کے  ان کو تکیں گے

یہ دن آج وہ بھی یہاں آگیا    ہے       Emojiکہ گالہ  ہر اک سمت گرنے  لگا ہے

چھتو ں       پر       سفیدی       نظر      آرہی      ہےEmoji      ہاں کیاری بھی  ہر اک بھر ی جارہی ہے

ادھر   فرش  اک  چاندنی   کا       بچھا        ہے      Emojiنشاں    اس پہ  لو قدموں کا   بن گیا ہے

کہیں ننھے  ننھے       سے          پائوں        بنے       ہیںEmoji بڑے بھی نشاں واں پہ اکثر پڑے ہیں

ہیں بچّے  گھروں سے بھی     آئے     نکل          کر     Emojiیہ اب برف میں کھیلیں گے سب ہی مل کر

صفا کرنے والے نے پیھرا       لگایا        Emojiکئی سمت میں اس  نے تودہ لگایا

حرارت نے ہے کام  اپنا       دکھایا      Emojiدیا   برف  کو   پگھلا،  شیشہ  بنایا

درختوں کی شاخوں پہ شیشہ چڑھا کے      Emojiزبس  یوں  ہے  اللہ نے  رکھا  سجا کے

حرارت سے پانی       کی     صورت      نئی      ہےEmoji      یہاں  برف کی سل کہ  ہر جا بچھی ہے

خطرناک  ہے اب تم آنگن سمجھ      لو   Emoji   سہارا   کہیں  لو  پھسلنے  سے بچ لو

جو محتاط  ہے   وہ تو  اب تک کھڑا ہے      Emojiیمین  اپنی  عجلت سے لو گر پڑا ہے



Check Also

عشق میں نے لکھ ڈالا "قومیت” کے خانے میں

عشق میں نے لکھ ڈالا "قومیت” کے خانے میں اور تیرا دل لکھا "شہریت” کے ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Enable Google Transliteration.(To type in English, press Ctrl+g)

error: Content is protected !!
%d bloggers like this: