یا تاب و تبِ عشق میں مرنے کے لئے ہے

اعجاز شاہین غزل کیا عُمر بسر ،ایسے ہی کرنے کے لئے ہے یا تاب و تبِ عشق میں مرنے کے لئے ہے کس کس کے لئے اور کہاں تک میں سمیٹوں مٹّی تو کسی طور بکھرنے کے لئے ہے آرائش و تجمیل کے سامان بہم ہیں آمادہ مگر کون سنورنے کے لئے ہے آپ اپنے سے بھی صاف مکر جاتے ہیں یعنی جو بات ہے اپنی ،وہ مزید پڑھیں

وائت ویت سینٹراوسلو میں انٹر کلچرل وومن گروپ میں کورسز کا بھرپورآغاز

)نمائندہ خصوصی اردو فلک نیوز ڈیسک(جمعرات کے روز پچیس اگست کی شام پانچ بجے وائت ویت سینٹر میں سخت بارش کے باوجود خواتین وحضرات نے مختلف کورسز کے تعارفی پروگرام میں بھرپورحصہ لیا۔ اس موقعہ پر وائت ویت سینٹر میں مزید پڑھیں