Home / ادب / شعرو ادب / شاعری / صحرا میں اور شہر میں دیوانے جا بجا

صحرا میں اور شہر میں دیوانے جا بجا

 Selected by Muhammad tariq
صحرا میں اور شہر میں دیوانے جا بجا 
پھیلے ہوۓ ہیں عشق کے افسانے جابجا 
بڑھنے لگی  ہے شاید تعداد دل جلوں کی 
بستی میں کھل گئے ہیں میخانے جابجا 
کسی آستاں سے پائی نہ عشق نے مراد 
ڈالے  حضور  سب  کے  نذرانے  جابجا 
کیونکر کسی کے لب پہ آۓ ہنسی بھلا 
جب دل میں سج گئے ہوں ویرانے جابجا 
شاید   کہ  ہجر آیا   ساقی کی  ذات پر 
  ٹوٹے  ہوۓ  ملے   ہیں   پیمانے   جابجا
کیسے کسی سے کہہ دوں میں حال دل صنم

 

Check Also

بہت مصروف رہتے تھے

بہت مصروف رہتے تھے ہواؤں پر حکومت تھی تکبر تھا کہ طاقت تھی بلا کی ...

One comment

  1. waah bht khoob

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Enable Google Transliteration.(To type in English, press Ctrl+g)

Copy Protected by Chetan's WP-Copyprotect.
%d bloggers like this: