Daily Archives: جنوری 14, 2015

کتنا مغموم تھا، کاش تو دیکھتا

غزل از ڈاکٹر جاوید جمیل   عشق محروم تھا، کاش تو دیکھتا  کتنا مغموم تھا، کاش تو دیکھتا   چشم_نم کا تبسم تری یاد میں کیسا معصوم تھا کاش تو دیکھتا   میرا افسانہء_درد تھا خوب تر اور منظوم تھا، کاش تو دیکھتا   میرے غم سے فقط تو ہی تھا بے خبر سب کو معلوم تھا، کاش تو دیکھتا ...

Read More »

پھرتیاں تو دیکھیں ۔۔۔۔۔

کشور ناھید ایک پاکستانی کا، ضدی اور وہ بھی اردو کے نام پر بلیک میل کرنے والا رنجیت چوہان کہ مجھے جاتے ہی بنی۔ عجب پر لطف سفر تھا۔ جانا تھا، شنابلی ٹرین سے، بیٹھتے ہی ا پ کی خدمت میں لیموں پانی کا گلاس پیش کیا جاتا ہے، پھر پانی کی بوتل اور اگر صبح کی گاڑی ہے تو ...

Read More »
Copy Protected by Chetan's WP-Copyprotect.